وہ وقت جب ڈائریکٹر سے تنگ آ کر بالی ووڈ اداکارہ نے اپنی کلائی کاٹ لی


بالی ووڈ ڈائریکٹرز کی طرف سے کئی اداکاراؤں کے ساتھ جنسی ہراسانی کے واقعات سامنے آ چکے ہیں، لیکن ایک ایسا واقع بھی پیش آیا ہے جس کو کبھی منظر عام پر نہیں لایا گیا۔ اس واقع کے مطابق ایک اداکارہ نے ڈائریکٹر سے تنگ آ کر اپنے ہاتھ سے نس ہی کاٹ ڈالی تھی۔ اس میں یہ بتانا ضروری ہے کہ ڈائریکٹر نے اداکارہ کو جنسی طور پر ہراساں نہیں کیا تھا۔ 
یہ واقعہ 1989 میں بلاک بسٹر فلم رام لکھن کی ریپ اپ پارٹی میں پیش آیا جس میں ڈمپل کپاڈیہ، جیکی شروف، انیل کپور، مادھوری دکشٹ اور گلشن گرو جیسے نامور اداکار کام کر رہے تھے اور ہدایتکاری کا فریضہ سبھاش گھئ کے زمے تھا جو اس وقت کا ایک بڑا نام تھا۔ اس فلم میں ایک نو عمر اداکارہ سونیکاگل بھی شامل تھی جو اس سے پہلے بی گریڈ فلموں کی اداکارہ تھی اور بالی ووڈ میں پہلی دفعہ کام کر رہی تھی۔
خراب شوٹنگ کی وجہ سے سونیکا کو ڈائریکٹر سبھاش سے اکثر ڈانٹ پڑتی تھی۔ فلم کی ریپ اپ پارٹی میں بھی دونوں کے درمیان توتکار ہوگئ جس پر سونیکا نے یہ محسوس کیا کہ جان بوجھ کر ڈائریکٹر اسے نیچا دیکھانےکی کوشش کر رہا ہے، اس لیے انہوں نے غصہ میں آکر اپنی کلائی کاٹ لی لیکن ان کی جان بچالی گئی تھی۔
واقعے کو 31 سال گزر جانے کے باوجود سونیکا نے کبھی اس کے متعلق بات نہیں کی، اور جب فلم ڈائریکٹر سبھاش سے اس واقعے کے بارے پوچھا گیا تو ان کا کہنا تھا کہ اداکارہ نے ذاتی پریشانیوں کی وجہ سے اپنی کلائی کاٹی تھی۔ 

وہ وقت جب ڈائریکٹر سے تنگ آ کر بالی ووڈ اداکارہ نے اپنی کلائی کاٹ لی وہ وقت جب ڈائریکٹر سے تنگ آ کر بالی ووڈ اداکارہ نے اپنی کلائی کاٹ لی Reviewed by Admin on مارچ 13, 2020 Rating: 5