راولپنڈی میں لڑکی کے کپڑے پھاڑ کر ویڈیو بنانے والے ملزمان کے ساتھ کیا ہوا ؟ وہ خبر آ گئی جس کا سب کو انتظار تھا

 


راولپنڈی میں لڑکی کو بے لباس کر کے ویڈیو بنا کر انٹرنیٹ پر ڈالنے   والے تین ملزمان کو پولیس نے گرفتار کر لیا۔گزشتہ روز راولپنڈی کی مقامی عدالت نے لڑکی کو بے لباس کر کے ویڈیو بنانے کے کیس کے ملزموں کی ضمانت خارج کر تے ہوئے ملزمان کو گرفتار کرنے کا حکم دیا تھا۔  ضمانت خارج ہونے پر ملزمان احاطہ عدالت سے فرار ہو کر بھاگ گئے تھے تاہم پولیس نے کارروائی کر کے دو ملزمان کو گرفتار کرلیا تھا۔

آج پولیس نے تیسرے ملزم کو بھی گرفتار کر کے عدالت میں پیش کر دیا اور تینوں ملزمان کا جسمانی ریمانڈ حاصل کیا ہے۔پولیس کا کہنا ہے کہ ملزمان ارسلان، محسن اور عامر کا 6 روزہ جسمانی ریمانڈ حاصل کر لیا گیا  ہے اوراب  ملزمان کا ، ویڈیو فارنزک ٹیسٹ،فوٹو گراماٹک ٹیسٹ ، پنجاب فازنزک سائنس ایجنسی کی طرف سے کروایا جائے گا۔

کچھ ماہ پہلے راولپنڈی کے علاقے سید پوری گیٹ میں مبینہ طورپر نشے میں دھت 4 نوجوانوں نے راہ چلتی لڑکی کو پکڑ کر اس  کے کپڑے پھاڑ دیے اور اس کی ویڈیو بنا کر سوشل میڈیا پر ڈال دی تھی۔ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہوئی تو  سی پی او راولپنڈی کے حکم پر ملزمان محسن اور ارسلان عرف آنی کے خلاف 15 جولائی کو مقدمہ درج گیا  لیکن کوئی گرفتاری عمل میں نہیں آسکی  تھی۔


راولپنڈی میں لڑکی کے کپڑے پھاڑ کر ویڈیو بنانے والے ملزمان کے ساتھ کیا ہوا ؟ وہ خبر آ گئی جس کا سب کو انتظار تھا راولپنڈی میں لڑکی کے کپڑے پھاڑ کر  ویڈیو بنانے والے ملزمان کے ساتھ کیا ہوا ؟ وہ خبر آ گئی جس کا سب کو  انتظار تھا Reviewed by Admin on اگست 13, 2020 Rating: 5