کورونا ٹیسٹ کرانے گئی نوجوان لڑکی سے لیب ٹیکنیشن نے جسم کے کس حصے سے سیمپل لے لیے؟ انتہائی شرمناک تفصیلات سامنے آگئیں



بھارت کی ریاست مہاراشٹر کے سرکاری کورونا سنٹر میں نے ٹیسٹ کرانے آئی لڑکی کے نازک حصے سے  لیب ٹیکنیشن نے سیمپل لے لیے۔

انڈین میڈیا کے مطابق امراوتی میں ایک دفتر کے  ملازم کا کورونا ٹیسٹ پوزیٹو آیا تھا جس کے بعد پورے سٹاف کا کورونا ٹیسٹ سرکاری طور پر کرایا گیا۔ جب ایک 24 سالہ نوعمر لڑکی سرکاری کورونا ٹیسٹ سنٹر میں ٹیسٹ کرانے کیلئے پہنچی تو لیب ٹیکنیشن نے  کہا کہ بہتر نتائج کیلئے نازک حصے کا سیمپل لینا ہوگا۔

لڑکی نے اپنے بھائی کو گھر آکر یہ بات بتائی جس کو شک ہوا اور اس نے ڈاکٹرز سے اس معاملے پر بات کی۔ ڈاکٹرز نے بتایا کہ کورونا کیلئے  صرف منہ اور ناک سے سیمپل لیے جاتے ہیں۔ اس بات کا  پتا چلتے ہی لڑکی کے گھر والوں نے پولیس سے رجوع کرلیااور پولیس  نے لیب ٹیکنیشن کو گرفتار کرکے اس کے خلاف ریپ کا مقدمہ درج کردیا ہے ۔


کورونا ٹیسٹ کرانے گئی نوجوان لڑکی سے لیب ٹیکنیشن نے جسم کے کس حصے سے سیمپل لے لیے؟ انتہائی شرمناک تفصیلات سامنے آگئیں کورونا ٹیسٹ کرانے گئی نوجوان لڑکی سے  لیب ٹیکنیشن نے جسم کے کس حصے سے سیمپل لے لیے؟ انتہائی شرمناک تفصیلات سامنے آگئیں Reviewed by Admin on اگست 03, 2020 Rating: 5